96

پولیس سربراہ ایبٹ آباد ظہور بابر آفریدی کی رجوعیہ گاوں میں کھلی کچہری براہ راست عوام

عوامی مسائل کا حل ان کی دہلیز پر ضلعی پولیس سربراہ ایبٹ آباد ظہور بابر آفریدی کی رجوعیہ گاوں میں کھلی کچہری براہ راست عوام کے مسائل اور شکایات سنیں اور ان کے حل کے حوالے سے متعلقہ افسران کو احکامات جاری کیے ، کھلی کچہری میں ڈی آر سی ، پی ایل سیز ممبران ، منتخب عوامی نمائیندگان ، معززین علاقہ اور عوام الناس کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔
خطاب میں ڈی پی او ایبٹ آباد کا کہنا تھا کہ ہزارہ ریجن تاریخی، جغرافیائی اور ثقافت کے اعتبار سے اہمیت کا حامل اور غیور، غیرت مند لوگوں کا خطہ ہے اور خیبرپختونخواہ کا یہ واحد ریجن ہے جو ہمیشہ سے پر امن رہا ہے اور شدت پسندی کو یہاں کسی بھی صورت قبول نہیں کیا گیا اس حوالے سے یہاں کے لوگ خراج تحسین کے مستحق ہیں ۔ خطاب کے دوران ضلعی پولیس سربراہ کا کہنا تھا کہ علاقہ کے امن کو برقرار رکھنے اور شدت پسندی کو روکنے کے لیے عوام الناس سمیت ، تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے علماء کرام اور عمائدین کو اپنا مثبت کردار ادا کرنا ہو گا امن و امان کے قیام کے لیے ضروری ہے کہ ہم ایک دوسرے کے عقائد، نظریات کا احترام کریں اور فرقہ واریت سے اجتناب کریں ۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ علاقے کے عمائدین ، اکابرین آگے آئیں اور عقل ، فکر ، میانہ روی اور دینی اصولوں کو اپناتے ہوئے علاقے کے امن و امان کو برقرار رکھنے میں اپنا مثبت کردار ادا کریں اور شرپسند عناصر کی نشاندہی کریں تاکہ ایسے عناصر کے خلاف قانون حرکت میں آئے اور ان کو کیفر کردار تک پہنچایا جاسکے ۔عوام کے تعاون سے علاقائی سطح پر لڑائی جھگڑوں، زمین و جائیداد کے تنازعات کے حل کے لیے یونین کونسلز لیول پر کمیٹیاں بنائی جا رہی ہیں جو ایسے معاملات جو آگے جا کے کسی بڑے حادثے کا سبب بن سکتی ہیں کی نشاندہی اور حل کے لیے اپنا کردار ادا کریں گی ۔ کھلی کچہری سے خطاب کے دوران ضلعی پولیس سربراہ کا کہنا تھا کہ دیگر جرائم پیشہ عناصر کے خلاف کاروائیوں کے ساتھ ساتھ منشیات جیسے ناسور کے خلاف بھی ایبٹ آباد پولیس بھرپور کریک ڈاون جاری رکھے ہوئے ہے اور منشیات کا خاتمہ ایبٹ آباد پولیس کی پہلی ترجیح ہے اس جہاد میں عوام کو چاہے کہ وہ پولیس کا ساتھ دے اور ایسے افراد کی اطلاع مقامی پولیس کو دیں تاکہ اس ناسور کو ختم کیا جا سکے اپنے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ ہوائی فائرنگ اور اسلحہ کی نمائش کرنے والوں کے خلاف قانون حرکت میں آئے گا اس حوالے سے لوگوں کو چاہے ایسی تقاریب کا بائیکاٹ کریں جن میں ہوائی فائرنگ ہو رہی ہو تاکہ علاقائی سطح پر اس فعل کی حوصلہ شکنی ہو سکے اور کسی بھی قسم کے حادثہ سے بچا جا سکے ۔ اس موقع پر کھلی کچہری کے دوران ضلعی پولیس سربراہ نے براہ راست عوام کے مسائل سنے اور ان کے حل کے حوالے سے متعلقہ افسران کو احکامات جاری کیے ۔

مانسہرہ میں موت کے سوداگروں کےخلاف کریک ڈاؤن مزید 2 گرفتار

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں