2,225

ایبٹ آباد کی رہائشی لڑکی کو گڑھی حبیب اللہ کے جنگل میں لیجا کر انتہائی بیدری سے قتل کردیاگیا

ایبٹ آباد(ھزارہ اپڈیٹ) ایبٹ آباد کے علاقے بانڈی میراچھترناتھ کی رہائشی نوبہتا دلہن کو گڑھی حبیب اللہ کے جنگل میں لیجا کر انتہائی بیدری اور سفاکی سے قتل کردیاگیا ہے،مقتولہ کی دو ہفتے قبل عبید نامی نوجوان سکنہ بانڈی میرا حال نڑیاں سے شادی ہوئی تھی اور مقتولہ شازیہ بی بی 21نومبر کو نڑیاں سے لاپتہ ہوئی تھی جس کی اطلاعی رپورٹ تھانہ کینٹ میں درج کرائی گئی تھی جس کی نعش 25نومبر کو تھانہ گڑھی حبیب اللہ کی حدود ڈمگلہ کنڈ جنگل سے ملی جس کو انتہائی بے دردی سے ذبح کر کے قتل کیا گیا تھا گڑھی حبیب اللہ پولیس نے اطلاع ملتے ہی نعش کو قبضے میں لیکر شناخت کے بعدنعش کو ایبٹ آباد پولیس کے حوالے کر دیاپولیس ذرائع کے مطابق مقتولہ کو تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد بے دردی سے ذبح کر دیا گیا اور اس سلسلے میں مقتولہ کے خاوند عبید ولد ظہور سے بھی پوچھ گچھ شروع کر دی ہے اور مقتولہ کے قتل اور اغواء کی ایف آر درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے مقتولہ شازیہ بی بی کی دو ہفتے قبل عبید سے شادی ہوئی تھی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں